All posts by admin

میرے دوستوں کو کس نے اغوا کروایا؟, زرداری نے راز سے پردہ اُٹھادیا

اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹرینز کے صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ کلبھوشن یادیو کو سزائے موت کا فیصلہ درست ہے مکمل حمایت کرتے ہیں، میرے دوستوں کے اغواءمیں وفاقی حکومت کا ہاتھ ہے، چوہدری نثار بے بس ہیں تو عہدہ چھوڑ دیں۔ وہ نجی ٹی وی کو انٹرویو دے رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کی سزائے موت کا فیصلہ درست ہے۔ کلبھوشن یادیو نے پاکستان میں تباہی پھیلاہی اسی بھارتی جاسوس کو اگر ہم اپنی سرزمین سے پکڑیں گے تو سزا تو دینگے۔ سوال یہ ہے کہ کلبھوشن پاکستان آیا ہی کیوں۔ بھارتی جاسوس کو سزا دینا ہمارا حق ہے۔ ملک دشمنوں کو پھانسی کی سزا کے حق میں ہےں۔ ملک کے دشمن کو میں نے بھی پھانسی دی حالانکہ باقی پھانسیاں روک دی تھیں۔ ہماری پارٹی کی جنرل پالیسی یہ ہے کہ ملک کے شہری کو پھانسی نہ دی جائے عمر قید دے دی جائے تاہم غیر ملکی جاسوس کو سزا دینا بلکہ جائز ہے۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ وفاقی حکومت میرے دوستوں کو اغواءکررہی ہے اس اغواءمیں وفاقی وزیرداخلہ کا ہاتھ ہے۔ انہیں کے خلاف ایف آئی آر کٹواﺅں گا۔ چوہدری نثار بے بس ہیں تو عہدہ چھوڑ دیں۔

پانامہ کیس کا ایسا فیصلہ دینگے جو صدیوں یاد رکھا جائےگا

اسلام آباد (آن لائن‘مانیٹرنگ ڈیسک ) سپریم کورٹ میں اورنج لائن میٹروٹرین منصوبہ لاہور سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے ہیں کہ پانامہ لیکس کا مقدمہ ایک شخص کا معاملہ نہیںبلکہ قانون کا معاملہ ہے ایسا فیصلہ دیں گے جو صدیوں تک یاد رکھا جائے گا، منگل کو کیس کی سماعت جسٹس اعجازافضل کی سربراہی میں جسٹس شیخ عظمت سعید، جسٹس مقبول باقر، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل پر مشتمل 5رکنی لارجربنچ کی، دوران سماعت درخواست گزار آئی اے رحمان کے وکیل خواجہ احمد حسین نے موقف اختیار کیا ہے کہ اورنج لائن کامعاملہ انجینئرنگ یا سول انجینئرنگ کانہیں ہے، اصل مسئلہ تاریخی ورثے کا تحفظ ہے، اس پر جسٹس اعجاز افضل نے کہا کہ اس بات پرعدالت اور شکایت کنندگان ایک صفحے پر ہیں ،عدالت بھی تاریخی ورثے کاتحفظ چاہتی ہے، ماہرین پر تعصب کا الزام لگانے کی بجائے ان کی رپورٹ میں سقم کی نشاندہی کریں، دیکھنا یہ ہے کہ شکایت کنندگان کے تاریخی ورثہ کے حوالے سے تحفظات درست ہیں کہ نہیں، تحفظات درست نہ ہوئے تو اٹھا کر پھینک دیں گے، جبکہ وکیل خواجہ احمد حسین کا کہنا تھا کہ ٹریک کے ستونوں کی تعمیر اور ٹرین کے چلنے سے پیدا ہونے والی تھرتھراہٹ کامجموعی جائزہ نہیں لیاگیا جسٹس شیخ عظمت سعید نے نیسپاک کے وکیل سے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ ایک گھنٹے میں کتنی ٹرینین ٹریک سے گزریں گی، ایک گھنٹے میں گزرنے والی ٹرینوں کی مجموعی تھرتھراہٹ کتنی ہوگی، نیسپاک کے وکیل اس نقطے پر جواب الجواب میں وضاحت کریں، دوران سماعت جسٹس اعجاز افضل خان نے حضرت علی رضی اللہ عنہ کے واقعہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کسی نے حضرت علی رضی اللہ سے پوچھا میرے سر کے بال کتنے ہیں، حضرت علی نے جواب دیا اگر بالوں کی تعداد بتا دوں تو آپ تصدیق کیسے کریں گے، اورنج ٹرین منصوبے سے متعلق رپورٹس کے غلط ہونے کا تعین کون کرے گا،منصوبے سے متعلق رپورٹس کو ماہر ہی دیکھ سکتا ہے جبکہ خواجہ احمد حسین کا کہناتھا کہ ڈاکٹر اوپل نے منصوبے کو محفوظ بنانے کیلئے مزید اقدامات کرنے کا کہا تھا، اس پر جسٹس شیخ عظمت سعید نے استفسار کیا کہ آپ بتادیں مزید کیا اقدامات ہونے چاہیں، اس پر نیسپاک کے وکیل شاہد حامد نے کہا کہ نیسپاک حکومت کی جانب مزید اقدامات اٹھانے پر رپورٹ عدالت کو دے چکے ہیںجس پر جسٹس شیخ عظمت سعید کا کہنا تھا کہ عدالت میں آدھی بات نہ کریں، آپ وہ والی بات کر رہے ہیں نماز کی طرف مت جاو¿جبکہ جسٹس اعجاز الاحسن نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ آپ کیا چاہتے ہیں کہ اورنج لائن کے پورے منصوبے کوختم کر دیا جائے، کیاصرف تاریخی ورثے کومحفوظ بنانے کے اقدامات اٹھائے جائیں اس پر خواجہ احمد حسین نے کہا کہ ماس ٹرانزٹ کے منصوبے میں رکاوٹ نہیں ڈالناچاہتے، تاریخی عمارتوں کے سامنے میٹروٹریک کو زیر زمین گزارا جائے، اس پر جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ زیرزمین میٹروٹرین کی تھرتھراہٹ زیادہ خطرناک ہوگی جبکہ جسٹس اعجاز افضل نے استفسار کیا کہ کیازیرزمین تعمیرات اس وقت ہوسکتی ہیں؟ تاریخی عمارتوں کی خوبصورتی متاثرہونے کا پیمانہ کیا ہے جبکہ جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ میٹروٹرین کورولرکوسٹر نہ بنائیں، زمین سے 45فٹ اوپر چلنے والی ٹرین کو45فٹ زیر زمین لیے جانہ ممکن نہیں، 90فٹ کاغوطہ تورولرکوسٹر بھی نہیں لگا سکتا، جسٹس اعجاز افضل نے کہا کہ تاریخی ورثہ جتناآپ کاہے اتنا ہمارا بھی ہے، مناسب وقت پرآپ کی آنکھیں کیوں نہ کھلیں، اس طرح کے منصوبے عوام کے پیسے سے بنتے ہیں،کیا عوام کے پیسے کوضائع کردیں، اس پر خواجہ احمد حسین نے کہا کہ تاریخی ورثے کولے کرمیں جذبات کی رومیں بہہ جاتاہوں اس پر جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ آپ کے جذبات غلط ہیں، آپ نے غلط مثال دی ہے ہمیں معلوم ہے کہ تاریخی ورثے کونقصان ہواتوبوجھ ہم پربھی ہوگا، درخواست گزار نے دوران سماعت پانامہ لیکس کے مقدمے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ نے پانامہ کے مقدمے میں کہا تھا کہ ایسا فیصلہ دیں گے جو 20سال تک یاد رکھا جائے گا، اورنج ٹرین کیس کو بھی پانامہ کی طرح سنا جائے، پانامہ کامقدمہ وزیراعظم اور ان کے بچوں سے متعلق تھا، اس پر جسٹس اعجاز فضل نے ریمارکس دیئے کہ پانامہ کامقدمہ ایک شخص کا معاملہ نہیں بلکہ قانون کا معاملہ ہے ایسا فیصلہ دیں گے جو صدیوں تک یاد رکھا جائے گا۔ عدالت عظمیٰ نے عدالتی وقت ختم ہونے کے باعث کیس کی مزید سماعت آج (بدھ) تک کیلئے ملتوی کردی۔

نواز شریف کی نااہلی دیوار پر لکھی جاچکی, قوم شکر اداکرے

اسلام آباد(آئی این پی، مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پانامہ کیس کے فیصلے پر پاکستانی قوم شکر ادا کرے گی‘ وزیر اعظم کی نااہلی دیوار پر لکھی ہوئی ہے۔ وہ منگل کو سینیٹر بابر اعوان سے ملاقات میں بات چیت کر رہے تھے۔ بابر اعوان نے عمران خان کو پانامہ کیس کے حوالے سے بریفنگ دی۔ ملاقات میں پانامہ کیس کے فیصلے کے بعد کی حکمت عملی پر بات چیت کی گئی۔ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ پانامہ کے فیصلے پر پاکستانی قوم شکر ادا کرے گی وزیر اعظم کی نااہلی دیوار پر لکھی ہوئی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ آرٹیکل 62 اور 63 کی اصل تشریح پانامہ کیس میں ہو گی۔ سینیٹر بابر اعوان نے کہا کہ وزیر اعظم کے بچوں نے کمائی والد کے وزیر اعظم بننے کے بعد کی ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کی ملاقات ‘ دونوں رہنماﺅں نے پانامہ لیکس کا فیصلہ آنے کے بعد ملک بھر کے دورے کرنے پر اتفاق کیا۔ تفصیلات کے مطابق منگل کو چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے ملاقات کی۔ جس میں ملکی سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور پانامہ لیکس کیس کے آنے والے فیصلے کے بعد کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں رہنماﺅں نے پانامہ کیس کے بعد ملک بھر کے دورے کرنے پر اتفاق کیا۔ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہاکہ پی ٹی آئی کے ساتھ مل کر ملک بھر کے دورے کروں گا۔ فیصلے کے بعد حکومت کو ہر محاذ پر ٹف ٹائم دیں گے۔ پاکستان تحریک انصاف نے انتخابی اصلاحات کمیٹی کو تجویز دی ہے کہ نگران حکومت کیلئے پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے جس میں 50 فیصد حکومتی اور 50 فیصد اپوزیشن ارکان شامل ہوں۔ سکیرٹری الیکشن کمیشن کے لئے 65 سال عمر کی حد مقرر کی جائے اور اس کی تعیناتی کمیشن خود کرے، ممبران کی تعیناتی پارلیمانی کمیٹی کے ذریعے کی جائے اور بیرون ملک پاکستانیوں کو ووٹ ڈالنے کا حق دیا جائے۔پی ٹی آئی کا یہ بھی کہنا ہے کہ انتخابی فہرستیں الیکشن سے 60 روز قبل آویزاں کی جائیں، انتخابی مہم میں جلسوں، جلوسوں ریلیوں اور لاوڈ سپیکر کے استعمال کی اجازت ہونی چاہئے۔ پی ٹی ا?ئی نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ ارکان اسمبلی کے انتخابی مہم چلانے پر پابندی ختم کی جائے۔

ویسٹ انڈیز کا ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ

گیانا(ویب ڈیسک)بار کی وجہ سے پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان تیسرا اور فیصلہ کن ون ڈے تاخیر کا شکار ہے۔ویسٹ انڈیز کے شہر پروویڈنس میں کھیلے جارہے فیصلہ کن معرکے میں ویسٹ انڈین کپتان جیسن ہولڈر نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا لیکن ٹاس کے بعد بارش شروع ہو گئی لیکن تھوڑی ہی دیر میں میچ کا دوبارہ آغاز ہوگیا۔ ایون لیوز اور والٹن نے اننگز کا آغاز کیا۔فیصلہ کن معرکے میں پاکستان کی جانب سے گزشتہ میچ کے فاتح اسکواڈ کو برقرار رکھا گیا جب کہ ویسٹ انڈیز نے الزاری جوزف کی جگہ ویرا سیمی پرمال کو شامل کیا گیا ہے۔

پاکستان کسی اسلامی ملک کے خلاف اتحاد کا حصہ نہیں بنے گا، وزیردفاع

وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کرانے والے، پاکستانی سالمیت کے خلاف کام کرنے والے لوگ چاہے سرحد پار سے آئیں یا پاکستان کے اندر ہوں، واضح پیغام ہے کہ ان کے ساتھ رعایت نہیں ہوگی۔خواجہ آصف نے سینیٹ میں پالیسی بیان دیتے ہوئے کہا کہ کل بھوشن کو تمام قوانین کو مدنظر رکھتے ہوئے موت کی سزا سنائی گئی،اس پر ساڑھے تین ماہ سے مقدمہ چل رہا تھا، تمام تقاضے پورے کیے گئے، مجرم چاہے تو 60 دن کے اندر اپیل کرسکتا ہے،کلبھوشن کے معاملے پرتمام چیزیں قوائد اورقوانین کے مطابق کی گئیں۔وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ بھارتی نیوی افسر کل بھوشن پاکستان سے گرفتار ہوا، اس کے پاکستان میں لوگوں کے ساتھ رابطے بھی تھے،ریاست کے ہر کونے میں پاکستان کا کنٹرول ہے، دو لاکھ جوان مغربی سرحد پر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں، 80ہزار جوان ایل او سی پر تعینات ہیں۔وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ جنرل ریٹائرڈ راحیل شریف نے این او سی کے لیے اپلائی نہیں کیا،سابق فوجی افسر 2سال بعد کہیں جانا چاہے تو این او سی کے لیے اپلائی کر سکتا ہے،انہیں جب این اوسی دیا جائے گا تو ہاﺅس کو بتادیں گے۔انہوں نے کہا کہ مئی میں سعودی عرب میں اجلاس میں اسلامی اتحاد کے خدوخال واضح ہوں گے،ایران کے ساتھ صدیوں پرانے تعلقات ہیں،اس کے تحفظات دور کررہے ہیں اور کریں گے۔خواجہ آصف نے مزید کہا کہ پاکستان ایک فرقے، فقہ یا مذہب کا نہیں، پاکستانیوں کا ملک ہے،ہم کسی مسلک یا فرقے کے اتحاد کا حصہ نہیں بنیں گے،سعودی عرب کی سیکیورٹی ہمارے دل کے قریب ہے، جب سعودی اتحاد کے خدوخال واضح ہوں گے توپارلیمنٹ میں ا?کر بیان کروں گا،کسی بھی ریاست یا اسلامی ملک کے خلاف کارروائی کا حصہ نہیں بنیں گے، اسلامی ممالک کا اتحاد خالصتاً دہشت گردی کے خلاف ہے۔انہوں نے کہا کہ ایسی کوئی صورتحال پیدا نہیں ہوئی جو سلالہ کا ذکر کیا گیا، ایسے معاہدے کا حصہ نہیں بن رہے جو کسی مسلم ممالک کے خلاف ہو، یمن کے معاملے والی قرارداد کے آج بھی پابند ہیں، ہمیں یقین ہے کہ اس اتحاد کے ایسے کوئی عزائم نہیں، ہماری فوج قطعی طور پرسعودی عرب کی حفاظت کے لیے تعینات ہے،34/35 سال میں کسی تنازع میں شامل نہیں ہوئے،پاکستان عالم اسلام کی واحد ایٹمی قوت ہے، پاکستان آج بھی سفیراوربھائی کا کردار ادا کر رہا ہے۔خواجہ آصف نے کہا کہ بھارتی گجرات میں منصوبہ بندی کے تحت قتل عام کیا گیا،مقبوضہ کشمیرمیں منصوبہ بندی کے تحت بھارتی فورسزقتل عام کررہی ہیں،کل بھی کشمیرمیں چاربچوں کو شہید کیا گیا۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ ٹی او آر ابھی قطعی طور پرطے نہیں ہوئے، مئی میں 41 ممالک کے اتحاد کا اجلاس ہے، اجلاس میں امکان ہے ٹی او آرز پر بات چیت ہو۔

اداکارہ کی شراب پارٹی کی ویڈیو لیک

لاہور(ویب ڈیسک)اسٹیج اداکارہ سدرہ نورکی درجنوں شر اب کی بوتلوں کے ہمراہ شراب پارٹی کی ویڈیو سامنے آگئی جبکہ شوبز حلقوں نے والدہ کے چالیسواں کے اگلے روز ہی منائی جانیوالی اس پارٹی کو شرمناک قرار دیا ہے۔سدرہ نور اس حوالے سے کسی قسم کو موقف دینے کو تیار نہیں بلکہ ویڈیو سامنے آنے پر وہ خاموش ہیں۔

معروف ہالی ووڈ اداکارہ خواجہ سرا نکلی

لاس اینجلس(ویب ڈیسک)اپنی خوبصورتی کے باعث شائقین کا دل ہالی ووڈ کی مایہ ناز اداکارہ کیسینڈرا کے بارے میں حیران کن انکشاف سامنے آگیا ، جس کے مطابق وہ لڑکی نہیں بلکہ ایک خواجہ سرا ہیں۔بین الاقوامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق کیسینڈرا پیدائشی طور پر ایک لڑکا تھی، جب وہ 18سال کا ہوا تو اس نے خود کو خوبصورت لڑکی بنانے کا فیصلہ کیا اور سرجری کے ذریعے اپنے عوارض اور خال و خد تبدیل کروانے لگا۔ آج اسے دیکھ کر کوئی نہیں کہہ سکتا کہ وہ کبھی لڑکا تھی۔ اب تک وہ اپنے جسم کو تبدیل کروانے پر اڑھائی لاکھ ڈالر(تقریباًاڑھائی کروڑ روپے) خرچ کر چکی ہے اور ایک انتہائی خوبصورت اور دلکش خاتون بن چکی ہے۔