All posts by admin

سنٹرل کنٹریکٹ یافتہ کرکٹرز فٹنس ٹیسٹ کیلئے طلب

لاہور(نیوزایجنسیاں) پاکستان کرکٹ بورڈ نے کیربیئن لیگ کھیلنے والے سینٹرل کنٹریکٹ کے حامل کرکٹرز کو فٹنس ٹیسٹ کیلئے وطن واپس طلب کرلیا۔قومی کرکٹرز کے فٹنس ٹیسٹ 22 اگست کو لیے جائیں گے جس کے بعد جو کرکٹر واپس جانا چاہے وہ جاسکتا ہے۔نیشنل ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کا پہلا مرحلہ جو ملتان میں ہونا تھا ملتوی کردیا گیا اور اب یہ ٹورنامنٹ ستمبر کے پہلے ہفتے میں فیصل آباد میں ہوگا یعنی جو کھلاڑی انٹرنیشنل اسٹینڈرڈ کی لیگ کھیلنے میں مصروف ہیں وہ صرف فٹنس ٹیسٹ دینے ویسٹ انڈیز سے پاکستان آئیں گے۔ان میں شعیب ملک، محمد حفیظ، شاداب خان، حسن علی، عماد وسیم اور بابر اعظم بھی شامل ہیں۔چیمپئنز ٹرافی کی فتح کے بعد قومی کرکٹرز نے فارغ وقت کا مصرف ڈھونڈ لیا تھا، انگلش کاو¿نٹی میں سرفراز احمد یارکشائر، محمد عامر ایسیکس اور جنید خان لنکا شائر کی نمائندگی کررہے ہیں، ریٹائر ہونے والے شاہد آفریدی ہیمپشائر کی جانب سے ایکشن میں ہیں۔کیریبیئن پریمیئر لیگ میں10 پاکستانی کرکٹرز شریک ہیں، شعیب ملک اور وہاب ریاض بارباڈوس ٹرائیڈنٹس، سہیل تنویر اور بابر اعظم گیانا ایمزون واریئرز،عماد وسیم اور محمد سمیع جمیکا تلاواز، محمد حفیظ اور حسن علی سینٹ کٹس پیٹریاٹس، شاداب خان ٹرینیڈاڈ اینڈ ٹوباگو اور کامران اکمل سینٹ لوشیا اسٹارز ٹیم میں شامل ہیں۔کاو¿نٹی اور لیگز کے معاہدوں میں شرط ہوتی ہے کہ قومی ذمہ داریوں کیلیے ضرورت پڑنے پر کرکٹر کو نہیں روکا جائے گا۔ لیکن پاکستان کے انٹرنیشنل میچز اکتوبر میں سری لنکا کیخلاف سیریز میں شروع ہوں گے۔

پروفیسر کی سینٹ کٹس کی پلے آفز میں رسائی یقینی

پورٹ آف سپین (اے پی پی) کیریبین پریمیئر لیگ (سی پی ایل) میں سینٹ کٹس اینڈ نیوس نے بارباڈوس ٹریڈنٹس کو 17 رنز سے ہرا دیا، بارش کے باعث میچ کا فیصلہ ڈک ورتھ لوئس میتھڈ کے تحت ہوا، کیرن پولارڈ کی 63 رنز کی طوفانی اننگز رائیگاں گئی۔ سی پی ایل کے 16 ویں میچ میں بارباڈوس ٹریڈنٹس نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 168 رنز بنائے، پولارڈ نے جارحانہ انداز اپناتے ہوئے حریف باﺅلرز کی خوب دھنائی کی اور 6 چھکوں کی مدد سے 63 رنز بنا کر ناٹ آﺅٹ رہے، سیموئل بدری نے 2 وکٹیں لیں، جواب میں سینٹ کٹس نے 9.3 اوورز میں 84 رنز بنائے تھے کہ بارش شروع ہو گئی جس کے بعد میچ مکمل نہ ہو سکا اور ڈک ورتھ میتھڈ کے تحت سینٹ کٹس کی ٹیم 17 رنز سے فتح یاب قرار پائی، کرس گیل 38 اور محمد حفیظ 30 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے۔

ثانیہ مرزا کی سنسناٹی ماسٹرز کے ویمنز ڈبلزایونٹ سے چھٹی

واشنگٹن (آئی این پی)سٹار بھارتی کھلاڑی ثانیہ مرزا سنسناٹی ماسٹرز ٹینس ٹورنامنٹ ویمنز ڈبلز سیمی فائنل میں شکست کے بعد ٹائٹل کی دوڑ سے باہر ہو گئیں، مارٹینا ہنگس پیش قدمی برقرار رکھتے ہوئے فائنل میں پہنچ گئیں۔امریکہ میں جاری ایونٹ میں گزشتہ روز کھیلے گئے ویمنز ڈبلز ایونٹ کے سیمی فائنلز میں نیکو لیسکو اور سیو وائی نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ثانیہ مرزا اور ان کی چینی جوڑی دار شوئی پینگ کو 6-4 اور 7-6 سے ہرا کر ایونٹ سے باہر کر دیا، سوئس سٹار مارٹینا ہنگس اور چن نے بربورا سٹرائیکووا اور لوسی سفارووا پر مشتمل جمہوریہ چیک کی جوڑی کو زیر کر کے فائنل کیلئے کوالیفائی کیا۔

سلمان بٹ کی ڈومیسٹک میں انٹری

لاہور(آئی این پی)کے سپاٹ فکسنگ کیس کے مرکزی کردار سلمان بٹ کی ڈومیسٹک کرکٹ میں واپسی نے نوجوان اوپنر سمیع اسلم کی مشکلات مزید بڑھا دیں۔تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے قومی ٹی ٹونٹی ٹورنامنٹ میں لاہور وائٹس کا کپتان مقرر کیا ہے اور 11ٹیسٹ اور 4ون ڈے میچز میں پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز رکھنے والے سمیع اسلم ڈرافٹ کے ذریعے اس ٹیم میں شامل کیے گئے ہیں ، دسمبر 2016کے بعد سے ٹیم سے دور 21سالہ سمیع اسلم کے پاس یہ سنہری موقع ہے کہ وہ ایک بار پھر ٹیم میں واپسی کریں تاہم یہ بہت مشکل نظر آرہا ہے کیوں کہ لاہور وائٹس کی ٹیم میں پہلے ہی 3اوپنرز موجود ہیں،سلما ن بٹ کپتان ہونے کے باعث ٹیم کا حصہ ہوں گے جبکہ قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل اورسابق کپتان اظہر علی کی موجودگی میں سمیع اسلم کو خدشہ ہے کہ انہیں فائنل الیون میں جگہ ملنا مشکل ہے ۔

شاہ رخ کی نائٹ رائیڈرزاورزلمی میں میچ پڑگیا

اسلام آباد (آئی این پی)جنوبی افریقا کی گلوبل ٹی ٹوئنٹی لیگ دو نومبر سے شروع ہوکر پندرہ دسمبر تک دھوم مچائے گی۔ایونٹ کا پہلا میچ پاکستان کے جاوید آفریدی اور بھارت کے شاہ رخ خان کے درمیان ہوگا۔ سوشل میڈیا پر میچ کو لے کر خوب دھوم مچی ہوئی ہے اور اسی منی پاک بھارت ٹاکرا قرار دیا جارہا ہے۔جاوید آفریدی کا کہنا ہے کہ دونوں ٹیموں کا ٹاکرا پاک بھارت میچ کا مزہ دے گا۔۔ شاہ رخ خان کی کیپ ٹان نائٹ رائڈرز کے کپتان جے پی ڈومینی جب کہ بنونی زلمی کے کپتان کونٹن ڈی کوک ہوں گے۔
۔ اس سے پہلے پی ایس ایل فرنچائز پشاور زلمی نے جنوبی افریقا میں اپنی دوسری فرنچائز بینونی زلمی متعارف کروادی۔جوہانسبرگ میں بینونی زلمی کے لوگو کی شاندار تقریب رونمائی ہوئی۔ جوہانسبرگ کے ہائی اسکول میں منعقدہ تقریب میں پشاور زلمی کےمالک جاوید آفریدی نے بینونی زلمی کے لوگو کی رونمائی کی۔ اکیس اگست کو جاویدآفریدی پریس کانفرنس میں بینونی زلمی کے ہیڈکوچ کا اعلان بھی کریں گے۔

ایک بار پھر پریس کانفرنس کا اعلان, شدید اختلافات کس سے؟, اہم نام سامنے آگیا

اسلام آباد( آن لائن ) سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے آج کانفرنس کا اعلان کردیا۔چوہدری نثار علی خان کے ترجمان کی طرف سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا کہ سابق وزیرداخلہ آج شام پانچ پنجاب ہاﺅس اسلام آباد میں پریس کانفرنس کریں گے تاہم ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکا کہ سابق وزیرداخلہ پریس کانفرنس میں کس حوالے سے بات کریں گے۔ ذرائع کے مطابق چودھری نثار علی خان پریس کانفرنس میں اپنی کارکردگی پر بات کریں گے اور پرویز رشید کی جانب سے کی گئی تنقید کا جواب بھی دیں گے، یاد رہے کہ گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر اطلاعات پرویز رشید نے کہا تھا کہ نواز شریف کے خلاف سازش جنرل (ر) پرویز مشرف کی ‘بد روح’ نے کی جبکہ اپنی وزارت داخلہ ہونے کے باوجود ہمارے خلاف فیصلے ہوئے۔ مسلم لیگ کے اہم ترین رہنما چوہدری نثار نے کل اہم پریس کانفرنس کا اعلان کیا تو سابق وزیر اعظم نواز شریف نے بھی رفقا سے مشاورت کر لی ،بھرپور جواب دینے کا فیصلہ کر لیا ۔نجی نیوز کے مطابق چوہدری نثار کی جانب سے پریس کانفرنس کے اعلان کے بعد نواز شریف نے قریبی رفقا سے مشاورت کی ہے جس میں طے پایا ہے کہ چوہدری نثار کی پریس کانفرنس پر پارٹی پالیسی کا بھرپور طریقے سے جواب دیا جائے گا ۔واضح رہے کہ پرویز رشید نے ایک انٹرویو میں کہا کہ وزیر داخلہ ہوتے ہوئے بھی ہمارے خلاف فیصلے ہوئے ،جے آئی ٹی بنی ہوئی ہے ،وٹس ایپ بھی ہوئے بلکہ بہت کچھ ہو جاتا ہے،ہم مشرف کو بھی باہر جانے سے نہ روک پائے ۔اس پر چوہدری نثار بھی میدان میں آگئے تھے اور ان کے ترجمان نے سینیٹر پرویز رشید کے بیانات پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ کچھ لوگوں نے اپنی غلطیوں اور کوتاہیوں کا سارا بوجھ وزارت داخلہ،اسٹیبلشمنٹ پرڈال دیا ہے۔ سابق وفاقی وزیر داخلہ نے کل شام 5بجے اہم پریس کانفرنس کا اعلان کیا ہے۔

الطاف،خان آف قلات ،روہرا باچر کو کونسی پاکستان مخالف ایجنسیوں کی حمایت حاصل، انکشافات نے کھلبلی مچادی

لاہور(مکرم خان) پاکستان مخالف امریکی رکن کانگریس ڈ انا روہرا باچر نے لندن میں ایم کیو ایم لندن کے سربراہ الطاف حسین اور جلاوطن بلوچ خان آف قلات سلیمان داﺅد سے ملاقات کی ہے۔ الطاف حسین نے چار گھنٹے جاری رہنے والی ملاقات میں ایم کیو ایم لندن کی رابطہ کمیٹی کے ارکان کی موجودگی میں ملاقات کی۔ اس موقع پر سلیمان داﺅد خان آف قلات سے بھی ملاقات ہوئی۔ انہوں نے مشترکہ مقاصد پر مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔ یاد رہے کہ ایم کیو ایم لندن کے ندیم نصرت کی جون کے آخر میں واشنگٹن میں اراکین کانگریس ڈانا روہرا باچر ٹیڈیو اور سنیٹر جان مک کین سے بھی ملاقات کی تھی۔ خودساختہ جلاوطن بلوچ خان آف قلات اس سے قبل لندن میں ان اراکین ڈانا روہرا باچر اور امریکہ کے ساتھ پاکستان مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہے ہیں۔ ڈانا روہرا باچر کیلی فورنیا میں ری پبلکن پارٹی کے رکن کانگریس چلے آ رہے ہیں۔ ڈانا روہرا باچر غیرقانونی تارکین وطن کے تحت مخالف سمجھے جاتے ہیں میری جوآنا کے استعمال کو قانونی حیثیت دینے کے حامی ہیں۔ ان نقصان سے امریکی فوج کی واپسی امریکہ کیلئے سودمند سمجھتے ہیں۔ ترکی میں امریکی ایمبسی پر ہونے والے پرتشدد وہنگامے کی وجہ سے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو طیب اردگان کو ”سزا“ دینے کیلئے دباﺅ ڈالتے رہے۔ روس جارجیا تنازعے میں روس کی حمایت کرنے والے ڈانا روہرا باچر شام میں روسی کارروائیوں کو جائز سمجھتے ہیں۔ 2011ءمیں امریکے ادارے ایف بی آئی نے انہیں متنبہ کیا تھا کہ روس خفیہ ادارے ان پر اثرانداز ہو سکتے ہیں۔ اپنے نجی روسی دورے میں روسی وزارت خارجہ کے اہلکاروں سے ان کی ملاقاتوں کو امریکی عوام ملکی مفاد کے مخالف سمجھتے ہیں۔ 7 جون 2017ءکو تہران میں ہوئے دہشتگردانہ حملے میں بے گناہ لوگوں کی ہلاکتوں کے باوجود اس اندوہناک واقعہ کو نیک شگون قرار دیا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر بھی الزام عائد کیا کہ وہ اس حملے میں پشت پر ہو سکتے ہیں۔ صدر رونالڈ ریگن کے دور میں ان کے اسسٹنٹ پریس سیکرٹری کے فرائض بھی انجام دیئے۔ اسلام دشمن تصور کیے جانے والے روہرا باچر کے آباﺅ اجداد جرمن اور انگلش نژاد تھے۔ امریکی کانگریس میں متحرک فعال کیے جانے والے روہرا باچر اسلام کو دہشت گردی کا ماخذ سمجھتے ہیں۔ عراق جنگ میں انہوں نے اٹھنے والے امریکی اخراجات کا مطالبہ نئی تشکیل پانے والی حکومت سے بھی کیا تھا۔پاکستان کی امداد کی بندش کے لیے سرگرم رونا روہرا باچر کہتے ہیں کہ پاکستان کی مدد کرنا ہٹلر کی مدد کے مترادف ہو گا پاکستانی امریکیوں کے قاتل ہیں۔ اپنے دوسرے ہم خیال ڈیڈیو کے ساتھ مل کر پاکستان کے لیے امریکی امدادوں کی راہ میں روڑے اٹکائے رہتے ہیں کیونکہ بقول ان کے پاکستان دہشت گردی کو ہوا دے رہا ہے بالخصوص فوجی امداد کے حوالے سے ان کا کہنا ہے جدید امریکی اسلحہ اور ٹیکنالوجی پاکستان کو نہیں دی جانی چاہیے چونکہ انہیں خدشہ ہے کہ افغانستان میں امریکی فوجیوں کے خلاف استعمال ہو گا۔ اسامہ بن لادن کو تلاش کرنے والے پراسرار شکیل آفریدی پاکستانی جیل سے رہائی دلانے کے زبردست حامی ہیں۔ ایف 16 طیاروں کی پاکستان کو فراہمی بھارتی ایماءپر رکوانے میں کردار ادا کر چکے ہیں۔ پاک چین عسکری اور معاشی تعاون کو امریکہ کیلئے بڑا خطرہ تصور کرتے ہیں۔پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرتے ہوئے 27 فروری 2013ءکو برسلز میں بین الاقوامی کانفرنس منعقد ہوئی جس میں پاکستان کے بعض خودساخلہ جلاوطن بلوچ رہنما بھی موجود تھے۔پاکستانی بھگوڑے دانشور طارق فتح کے ساتھ کانفرنس سے خطاب کیا۔ (غیرنمائندہ قوموں کی عوامی تنظیم UNPO کے پلیٹ فارم پر بلوچستان کے مستقبل کیلئے خطاب کرتے ہوئے بلوچستان میں ریفرنڈم کا مذموم مطالبہ کیا جس میں بلوچستان کے لوگوں کو استصواب رائے کا حق دیئے جانے کا مطالبہ میں کہا کہ بلوچستان کو آزادی دی جانی چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے امریکی پیسے اور امریکی امداد سے پاکستان کی غنڈہ حکومت نے بلوچستان میں قتل وغارت کا بازار گرم کر رکھا ہے جو انسانیت کیلئے لرزہ خیز ہے۔ پاکستانی حکام پر جنگی جرائم کے مقدمے چلائے جانے چاہئیں۔ اسلام دشمن اور پاکستان کا بدترین مخالف ڈانا روہرا باچر ہر موقع اور پلیٹ فارم پاکستان دشمنی کا اظہار کرتے ہیں جس میں انہیں پاکستان کے بدترین ممالک کی خفیہ ایجنسیوں کی تائید وحمایت حاصل ہے۔ اس قدر پاکستان دشمن اور اسلام مخالف امریکی رکن کانگریس سے الطاف اور سلیمان داﺅد سے ملاقات قابل تشویش ہے جسے دنیا بھر میں محب وطن پاکستانیوں نے ناپسندیدگی کی نظر سے دیکھا۔

سپیکر قومی اسمبلی کا جسٹس آصف سعید کیخلاف ریفرنس ایک معمہ, اصل کہانی سامنے آگئی

اسلام آباد (مانیٹر نگ ڈیسک)سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کی جانب سے پاناما بنچ کے سربراہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کیخلاف ریفرنس معمہ بن گیا ہے۔5 صفحات پر مشتمل ریفرنس کی کاپی منظر عام پر آگئی لیکن سپریم جوڈیشل کونسل کے ذرائع، اٹارنی جنرل اشتر اوصاف اور سپیکر کے دفتر نے ایسا کوئی ریفرنس دائر کیے جانے کی تردید کی ہے۔ قومی اسمبلی سیکریٹریٹ کے ترجمان نے بھی بیان جاری کیا ہے کہ سپیکر قومی اسمبلی نے کسی جج کے خلاف کوئی ریفرنس دائر نہیں کیا۔ سپیکر قومی اسمبلی کے بارے میں غلط بیانی اور مبالغہ آرائی سے گریز کیا جائے۔تاہم سپیکر ایاز صادق کی جانب سے ریفرنس کی تردید نہ کیے جانے کی وجہ سے معاملہ مشتبہ اور ابہام پیدا ہوگیا ہے۔قبل ازیں یہ اطلاعات سامنے آئی تھیں کہ سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج اور پاناما بینچ کے سربراہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کیخلاف آئین کے آرٹیکل 209 کے تحت 5 صفحات پر مشتمل ریفرنس دائر کردیا ہے جس میں مو¿قف اختیار کیا گیا ہے کہ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے پانامہ کیس کے فیصلے میں کہا کہ سپیکر نے اپنی ذمہ داریاں ادا نہیں کیں اور اس بنیاد پر پاناما کیس سے متعلق درخواستوں کو قابل سماعت قرار دیا۔ ایاز صادق نے ریفرنس میں کہا کہ سپیکر کو وزیراعظم کا وفادار اور جانبدار قرار دینا حقائق کے منافی ہے۔اطلاعات کے مطابق ریفرنس میں یہ بھی مو¿قف اپنایا گیا ہے کہ سپیکر ایوان کے ووٹوں سے منتخب ہوتا ہے اور سپیکر کا دفتر کوئی تحقیقاتی ادارہ نہیں ہوتا جبکہ سپریم کورٹ نے دس ماہ تک پانامہ سے متعلق درخواستوں کی سماعت کے بعد فیصلہ سنایا اور سپیکر کا اس حوالے سے کوئی کردار نہیں تھا۔

نواز شریف کیا کرنا چاہ رہے ہیں؟, اہم شخصیت حیران کُن انکشاف

اسلام آباد (آئی این پی) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ایاز صادق نواز شریف کی جیب کی گھڑی اور ہاتھ کی چھڑی ہیں ،آج اداروں کے خلاف سڑکوں پر زہر اگلا جا رہا ہے، جو کھیل کھیلا جا رہا ہے وہ تصادم کی طرف جا رہا ہے، مسلم لیگ (ن) نے اپنی صفائی میں دستایوزات جمع نہیں کروا سکے، گینگ آف5 ان کو اس گھڑے میں لے کر جا رہے ہیں کیونکہ وہی 5ججز نے نظرثانی کا فیصلہ کرنا ہے، نیب نے 7دن میں حدیبیہ پیپرز کو کھولنے کا عندیہ تھا، حدیبیہ بل میں شریف برادران اور ان کی اولادیں ملوث ہیں، عدالت چل کر لاہور گئی، مگر یہ وہاں بھی پیش نہیں ہوئے، نواز شریف ایک این آر او چاہتے ہیں اور کوئی غیر ملکی دستانے پہن کر ان کو بچانے آئے، اردوان کی طرف جانا چاہتے ہیں، سپریم کورٹ کے فیصلے سے پہلے جنرل بٹ کو ڈھونڈا جا رہا تھا مگر ان کو کوئی جنرل بٹ نہیں ملا، جے آئی ٹی سے پہلے تو مٹھائی بانٹ رہے تھے کیونکہ فیصلہ انگریزی میں تھا، ان کی انگریزی ویسے بھی کمزور ہے،پی پی اتنی بھولی نہیں وہ اپنا پنجاب کا وقت ضائع نہیں کریں گے، (ن) کے جنازے کے ساتھ جو جائے گا وہ خود بھی مر جائے گا، اگر ججز کے خلاف زبان بند نہ کی تو ان کے خلاف تحریک چلائیں گے، نواز شریف جی ایچ کیو بریگیڈ 4 سے اترا ہے، فوج کی انگلی پکڑ کر آگے آیا ہے، جے آئی ٹی کے خلاف کبھی کوئی بات نہیں کی، میں نے چوہدری نثار کو کہا کہ تو ڈرپوک ہے ، نواز شریف نے اداروں کے ساتھ ٹکراﺅ کا فیصلہ کرلیا۔وہ ہفتہ کو یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ شیخ رشید احمد نے کہا کہ آج جو ملکی حالات خراب ہوتے جا رہے ہیں، اس کی وجہ ایسا ایک نا اہل شخص ہے جس نے اقرار کیا تھا کہ فیصلہ من و عن تسلیم کریں گے، مگر اب تسلیم کرنے سے انکار کردیا، ایاز صادق جیب کی گھڑی اور ہاتھ کی چھڑی ہیں اور وزیروں کی طرف دیکھ کر رولنگ دیتے ہیں، آج اداروں کے خلاف سڑکوں پر زہر اگلا جا رہا ہے، جو کھیل کھیلا جا رہا ہے وہ تصادم کی طرف جا رہا ہے، مسلم لیگ (ن) نے اپنی صفائی میں دستایوزات جمع نہیں کروا سکے، گینگ آف5 ان کو اس گھڑے میں لے کر جا رہے ہیں کیونکہ وہی 5ججز نے نظرثانی کا فیصلہ کرنا ہے، نیب نے 7دن میں حدیبیہ پیپرز کو کھولنے کا عندیہ تھا، حدیبیہ بل میں شریف برادران اور ان کی اولادیں ملوث ہیں، عدالت چل کر لاہور گئی، مگر یہ وہاں بھی پیش نہیں ہوئے، نواز شریف ایک این آر او چاہتے ہیں اور کوئی غیر ملکی دستانے پہن کر ان کو بچانے آئے، اردوان کی طرف جانا چاہتے ہیں، سپریم کورٹ کے فیصلے سے پہلے جنرل بٹ کو ڈھونڈا جا رہا تھا مگر ان کو کوئی جنرل بٹ نہیں ملا، جے آئی ٹی سے پہلے تو مٹھائی بانٹ رہے تھے کیونکہ فیصلہ انگریزی میں تھا، ان کی انگریزی ویسے بھی کمزور ہے، اگر یہ انقلابی ہیں تو ثابت کریں والیم10اگر خواجہ حارث دیکھ سکتے ہیں تو پوری قوم دیکھ سکتی ہے، والیم 10اور ڈان لیکس دونوں کو کھولا جائے، آج اس پر پرویز رشید بات کر رہے ہیں، جتنے لوگ 13اگست کے جلسے میں تھے ،لیاقت باغ کے باہر لوگ تھے اس سے آدھے لوگ بھی کمیٹی چوک میں نہیں لا سکے، اگر کوئی عام بندہ پکڑا جائے تو نیب کا قانون حاوی ہو جاتا ہے، ان کی عدم موجودگی میں کیس کا ٹرائل ہو گا اور بعد میں یہ کہیں گے کہ ہم اس کیس میں پارٹی ہی نہیں، نواز شریف کا شاہی خاندان تصادم چاہتا ہے، ایل این جی کا معاہدہ 15 سال کےلئے کیا گیا اس کی تفصیلات جاری نہیں کی گئی، 7 دفعہ وزیر رہا ہوں اورخاقان عباسی کو چیلنج کرتا ہوں،200 ارب کی کرپشن ایل این جی میں کی گئی، سب سے مہنگی گیس لی گئی ہے، لوگ 3سال کا معاہدہ کرتے ہیں اور انہوں نے 15سال کا معاہدہ کیا، ڈانگ کانگ بلیک لسٹ کمپنی تھی، سی پیک کے بہت سارے کیسز کا ٹرائل چین میں بھی ہو گا اور پاکستان میں بھی ٹرائل ہو گا، چیئرمین نیب کو خط لکھا ہے اور ایک ہفتے کے ٹائم بارٹ میں ریفرنس پیش کرنا تھا ، ایل این جی کے حوالے سے دوبارہ سپریم کورٹ جاﺅں گا، نواز شریف نفسیاتی دورے سے باہر آئے اور ملک کے حوالے سے سوچے، پارلیمنٹ میں اچکزئی جیسے لوگ بھی ہیں، پی پی اتنی بھولی نہیں وہ اپنا پنجاب کا وقت ضائع نہیں کریں گے، (ن) کے جنازے کے ساتھ جو جائے گا وہ خود بھی مر جائے گا، اگر ججز کے خلاف زبان بند نہ کی تو ان کے خلاف تحریک چلائیں گے، نواز شریف جی ایچ کیو بریگیڈ 4 سے اترا ہے، فوج کی انگلی پکڑ کر آگے آیا ہے، جے آئی ٹی کے خلاف کبھی کوئی بات نہیں کی، میں نے چوہدری نثار کو کہا کہ تو ڈرپوک ہے ، نواز شریف نے اداروں کے ساتھ ٹکراﺅ کا فیصلہ کرلیا،58ٹو بی ختم ہوا ٹھیک ہوا، انور عزیز اور یعقوب ناصر کو تولیوں کی کرپشن میں پگڑا گیا ہے، 10 ارب کی ایفی ڈرین لی ہے اس پر 9سی کا ہے اور 10 ارب کے ہرجانے کا دعویٰ بھی کیا ہے، ایل این جی کے کاغذ دوبئی میں یا لندن میں ملنے کا امکان ہے، ان میں ضیاءالحق کی روح تھی، ضیاءالحق نے نواز شریف کےلئے دعا کی، اعجاز الحق کےلئے نہیں کی۔

پاکستانی مدر ٹریسا ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی تدفین سرکاری اعزاز کے ساتھ کردی گئی

کراچی(این این آئی)پاکستان میں جذام کے خاتمے کے لیے شب و روز محنت کرنے والی ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی تدفین سرکاری اعزازاور قومی پرچم کے ساتھ کراچی کے گورا قبرستان میں کردی گئی ہے۔تدفین میں صدرمملکت ممنون حسین، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ،ائیر چیف مارشل سہیل امان ،گورنرسندھ محمد زبیر ، وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ احمد علی ایم شیخ ، کورکمانڈر کراچی سمیت متعدد اہم سیاسی اور سماجی شخصیات نے شرکت کی۔پاکستان کی مدر ٹریسا کہلائی جانے والی ڈاکٹر رتھ فاﺅکی آخری رسومات ہفتہ کی صبح صدر میں واقع سینٹ پیٹرک کیتھیڈرل میں ادا کی گئیں۔ہزاروں چاہنے والوں کی آنکھیں اپنے مسیحا کے آخری دیدار پراشکبارتھیں۔آخری رسومات میں تینوں مسلح افواج کے دستوں کے علاوہ وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ، گورنر سندھ محمد زبیر، سعید غنی، ڈاکٹر ادیب رضوی، ڈاکٹر فاروق ستار، میئر کراچی وسیم اختر اور پاکستان میں جرمن سفیر سمیت دیگر شخصیات نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اس موقع پر سینٹ پیٹرک کیتھیڈرل میں موجود افراد نے کھڑے ہوکر ڈاکٹررتھ فاﺅ کو خراج عقیدت پیش کیا۔ان کے تابوت کو پاکستانی پرچم میں لپیٹا گیا ۔سینٹ پیٹرک کیتھیڈرل میں موجود افراد کو ڈاکٹر رتھ فاﺅ کا آخری دیدار کرایا گیا۔پاک فوج کے دستے نے ڈاکٹر رتھ فاﺅ کو آرٹلری گنز کی سلامی دی اور ان کے جسد خاکی کو سرکاری اعزاز کے ساتھ سینٹ پیٹرک کیتھڈرل چرچ پہنچایا گیا۔ میری ایڈی لیڈ لیپرسی سینٹر میں ان کے مریضوں ، ملنے والوں اور انگنت پرستاروں کو آخری دیدار کرایا گیا۔ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی آخری رسومات کے موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کیئے گئے تھے۔چرچ کے اطراف عمارتوں پر رینجرز اہلکار تعینات کیئے گئے تھے جبکہ چرچ میں خواتین اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔سیکورٹی کے لئے واک تھرو گیٹ بھی نصب کیئے گئے اور رسومات میں شرکت کے لیے سیکورٹی پاسز جاری کئے گئے تھے ۔ڈاکٹررتھ فاکی وصیت کے مطابق ان کی تدفین سرخ جوڑے میں کی گئی۔جذام یا کوڑھ کے مریضوں کا علاج کرنے والی ڈاکٹر رتھ فاﺅ 10اگست کی رات کراچی میں چل بسی تھیں۔ ڈاکٹر رتھ فاﺅ 9 ستمبر1929 کو جرمنی کے شہر لیپ زگ میں پیدا ہوئیں تھیں۔ ڈاکٹر رتھ فاﺅ 1960 میں پاکستان آئیں اور پھر جذام کے مریضوں کے لیے اپنی ساری زندگی وقف کردی تھی۔ وہ جذام کو مریضوں کو مفت سہولیات فراہم کرتی تھیں۔عالمی ادارہ صحت کی جانب سے 1996 میں پاکستان کو کوڑھ کے مرض پر قابو پالینے والے ممالک میں شامل کیا گیا۔ پاکستان کو یہ اعزاز دلانے میں ڈاکٹررتھ فاو نے سب سے اہم کردار اداکیا۔انسانیت کی اس عظیم خادمہ ڈاکٹر رتھ فاو کو1998 میں اعزازی پاکستانی شہریت دی گئی جبکہ انہیں ہلال امتیاز، ستارہ قائد اعظم ، ہلال پاکستان اورلائیو اچیومنٹ ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

الیکشن کمیشن ایک بار پھر عمران خان کیخلاف ایکشن میں آگیا

اسلام آباد(آن لائن)الیکشن کمیشن نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے خلاف توہین عدالت کی باضابطہ کارروائی کا آغاز کرنے کا فیصلہ کرلیا اور کہا ہے کہ عوامی نمائندگی ایکٹ اور آئین کے آرٹیکل 204 کے تحت توہین عدالت پر کارروائی کا اختیار رکھتے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق الیکشن کمیشن نے عمران خان کے خلاف توہین عدالت کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے۔ فیصلہ متفقہ طور پر 5 رکنی کمیشن کی جانب سے جاری کیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے فیصلے میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن عوامی نمائندگی ایکٹ اور آئین کے آرٹیکل 204 کے تحت توہین عدالت کا اختیار رکھتا ہے اور عمران خان کے خلاف کارروائی آئین کے آرٹیکل 103 اے، 204 عوامی نمائندگی ایکٹ اور توہین عدالت آرڈیننس کے تحت کی جارہی ہے۔الیکشن کمیشن نے اپنے فیصلے میں سپریم کورٹ کے مختلف کیسز کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ کمیشن کسی بھی شخص کی درخواست پر توہین عدالت کی کارروائی کرسکتا ہے ملک کی مختلف عدالتوں میں توہین عدالت کی ہزاروں درخواستیں دائر کی گئی ہیں اور الیکشن کمیشن میں توہین عدالت کی کارروائی کی درخواست پٹیشنر نے دائر کی جو کیس کا براہ راست فریق ہے جب کہ عمران خان نے یکم جنوری 2017 کو توہین آمیز ریمارکس پر تحریری طور پر معافی نہیں مانگی۔کیس کی سماعت میں عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے دلائل میں کہا تھا کہ توہین عدالت کا معاملہ فرد اور عدالت کے مابین ہوتا ہے، الیکشن کمیشن نے عمران خان کے وکیل کے دلائل مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کے خلاف توہین عدالت کی باضابطہ کارروائی کا آغاز کردیا گیا ہے، الیکشن کمیشن نے عمران خان کو شوز کاز نوٹس جاری کرتے ہوئے 23 اگست تک جواب طلب کرلیا ہے۔ عمران خان کے خلاف کارروائی آئین کے آرٹیکل 103 اے ¾ 204 عوامی نمائندگی ایکٹ اور توہین عدالت آرڈیننس کے تحت کی جارہی ہے۔الیکشن کمیشن نے اپنے فیصلے میں سپریم کورٹ کے مختلف کیسز کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کمیشن کسی بھی شخص کی درخواست پر توہین عدالت کی کارروائی کرسکتا ہے ملک کی مختلف عدالتوں میں توہین عدالت کی ہزاروں درخواستیں دائر کی گئی ہیں اور الیکشن کمیشن میں توہین عدالت کی کارروائی کی درخواست پٹیشنر نے دائر کی جو کیس کا براہ راست فریق ہے ۔

اداروں سے محاذ آرائی بارے وزیراعظم کا اہم بیان آگیا

کوئٹہ (این این آئی )وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاہے کہ حکومت اور کسی بھی ادارے کے درمیان محاز آرائی ہے نہ ہی ہوگی ،آئندہ الیکشن 4 جون کو ہونگے ،آصف زرداری سمیت تمام سیاسی جماعتیںالیکشن کی تیاری میں بیان دے رہی ہیں،مشترکہ مفادات کونسل میں بلوچستان کی کوئی نشست کم نہیں ہوئی ایسے خبروں کی نفی کرتے ہیں ،بلوچستان سمیت تمام صوبوں کو گیس رائلٹی مل رہی ہے ،بلوچستان میں جاری ترقیاتی منصوبوں کو محمد نواز شریف کے اعلان کردہ پیکیج کے مطابق آگے بڑھائینگے ،پورے ملک میں 2013ءکی نسبت آج امن وامان کی صورتحال بہتر ہے۔وزیراعظم نے یہ بات ہفتہ کو گورنر ہاﺅس کوئٹہ میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی ۔اس موقع پر گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی ،وزیراعلی بلوچستان نواب ثناءاللہ زہری ،وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال ،وفاقی وزیر سیفران لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ ،وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شیپنگ میر حاصل بزنجو ، قومی سلامتی کے مشیر لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر جنجوعہ ،صوبائی وزیرداخلہ میر سرفراز بگٹی ،سینیٹر آغا شاہ زیب درانی بھی وزیر اعظم کے ہمراہ تھے ۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ بلوچستان میں امن وامان کی صورتحال از سر نو جائزہ لینے کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا کہ بلوچستان میں امن وامان میں مزید بہتری کیلئے اقدامات کیے جائینگے ۔انہوں نے کہاکہ 2013ءمیں جب ہماری حکومت آئی تو اس وقت حالات بہت خراب تھے لیکن آج حکومت کی بہتر حکمت عملی کی وجہ سے امن وامان کی صورتحال میں بہتری آئی ہے امن وامان برقرار رکھنے کیلئے مشکلات آتی ہیں لیکن ہم نے ہمیشہ کوشش کی ہے کہ دہشتگردی کے تھرٹ کو ختم کیا جائے اور فیصلہ کیا گیا ہے کہ بلوچستان میں امن وامان مزید بہتر بنانے کیلئے اقداما ت کیے جائینگے ۔انہوں نے کہاکہ بلوچستان میں جاری ترقیاتی منصوبوں کو سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے اعلان کردہ پیکیج کے مطابق آگے بڑھائیں گے اور بلوچستان کے ہر ضلع ہیڈ کوارٹر میں 15ارب روپے سے گیس کے منصوبے شروع کئے جائیں گے بلوچستان میں کسانوں کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے پورے صوبے میں ٹیوب ویلوں کو تین مرحلوں میں شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا کام شروع کردیا گیا ہے جبکہ صوبے میں پانی کی کمی کو دور کرنے کیلئے نو تشکیل کردہ واٹر ریسورس کی منسٹری کے ذریعے ڈیم بنائے جائینگے ۔انہوں نے کہاکہ کئی دہائیوں سے زیر التواءکچھی کینال کا منصوبہ پر جلد کام شروع کیا جائے گا اس منصوبے سے بلوچستان میں 70ہزار ایکٹر اراضی سیراب ہوگی ،سی پیک منصوبے کے تحت ملک کی پہلی پارکو کوسٹل ریفانیری گڈانی میں شروع کی جائے گی جبکہ وزیراعظم صحت کارڈ منصوبے کو بلوچستان کے 6اضلاع سے بڑھا کر پورے بلوچستان میں وسعت دی جارہی ہے ،بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کو بھی پورے صوبے میں جلد شروع کردیا جائے گا ۔انہوں نے کہاکہ ان تمام اقدامات کا مقصد بلوچستان میں پائے جانے والے احساس محرومی کے عنصر کو ختم کرنا ہے اور جلد ہی بلوچستان امیر ترین صوبہ بنے گا ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ منتخب حکومت ہی اسٹیبلشمنٹ ہوتی ہے جو کہ سب کے ساتھ ملکر پاکستا ن کے عوام کی بہتری کیلئے کام کررہی ہے سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے خلاف ریفرنسز کی مخالفت سے متعلق سوا ل کے جواب میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ ریفرنس فائل کرنا جن لوگوں کا کام ہے وہ اپنا کام کررہے ہیں ہم اپنا دفاع کرنا جانتے ہیں اور ہرصورت میں ریفرنسز میں دفاع کرینگے ۔انہوں نے کہاکہ مجھے نہیں معلوم کہ آصف علی زرداری نے کس پس منظر میںڈائیلاگ کا حوالہ دیتے ہوئے بات چیت سے انکار کیا ہے ہم سیاسی لوگ ہیں سیاسی جماعتوں میں ہمیشہ بات چیت ہونی چاہیے بات چیت کے ذریعے ہی سیاست ہوتی ہے البتہ یہ الیکشن کا سال ہے ہر کوئی سیاسی بیان دے رہا ہے زرداری صاحب نے بھی بیان دیا ہے آئندہ الیکشن 4جون کو ہونگے اس کے بعد سب کچھ ٹھیک ہوجائے گا ،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ حکومت اور کسی بھی ادارے کے درمیان محاذ آرائی نہیں ہے البتہ میں اخبارات میں یہ پڑھتا ہوں تو مجھے محاذ آرائی نظر آتی ہے درحقیقت ایسی کوئی صورتحال نہیں ہے ۔انہوں نے کہاکہ سی سی آئی میں وفاق کی تین سیٹیں ہوتی ہیں جنہیں وفاق نامزد کرتا ہے جس میں سے ایک سیٹ آئی پی سی سی کی ایک فنانس کی ہوتی ہے ا سکے علاوہ چار صوبوں کے وزراءاور دیگر نمائندے ہوتے ہیں اس میں صوبوں کی نمائندگی کی کوئی بات نہیں ہے اور نہ ہی بلوچستان کی کوئی سیٹ کم ہوئی ہے یہ سب تعصب پھیلانے کی بات ہے جس کی ہم مکمل نفی کرتے ہیں مسلم لیگ (ن) نے یہ ثابت کیا ہے کہ وہ پورے ملک کی جماعت ہے ہم نے تمام صوبوں کو 19سو ارب روپے سے زائد رقم دی ہیں اور جتنے فنڈز ہم نے صوبوں کو دیئے ہیں ان کی مثال نہیں ملتی اسی طرح تما م صوبوں کو گیس کی مد میں رائلٹی ملتی ہیں جہاں تک 18ویں ترمیم کے تحت اختیارات کی بات ہے تویہ مشترکہ مفادات کونسل کا معاملہ اس پر سی سی آئی میں بحث جاری ہے میں اتنا یقین دلاتا ہوں کہ کوئی بھی صوبہ اس وقت نقصان میں نہیں ہے تمام صوبوں پر مثبت نتائج مرتب ہورہے ہیں ۔اس موقع پر وزیراعلی بلوچستان نواب ثناءاللہ زہر ی نے کہاکہ وہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے مشکورہیں کہ انہوں نے بلوچستان کا دورہ کیا اور یہاں کے مسائل سنے اور انکے حل کیلئے اقدامات کی یقین دہانی کروائی ۔انہوں نے کہاکہ ہم امید کرتے ہیں کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی بلوچستان کے مسائل کے حل کیلئے ذاتی دلچسپی لیں گے اور وہ مسلم لیگ (ن) اور سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے بلوچستان سے متعلق ویژن کو آگے لے کر چلیں گے ۔

لیگی رہنماﺅں کیخلاف بیان بازی

لاہور (اپنے سٹاف رپورٹر سے) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے پارٹی کے تمام راہنماﺅں اور عہدےداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ ایسی بیان بازی سے احتراز کریں جس سے قومی اداروں کے احترام پر بالواسطہ یا بلاواسطہ آنچ آنے کا اندیشہ ہو-وزیراعلی نے کہاکہ پاکستان اداروں کے درمیان تصادم کا متحمل نہیں ہوسکتا-انہوں نے مزید کہاکہ میں مسلم لیگ(ن) کے تمام بہی خواہوں سے بھی یہ کہنا ضروری سمجھتا ہوں کہ وہ کسی بھی ایسی خیال آرائی سے گریز کریں جو قومی اداروں کے وقار اورا حترام کے منافی ہو- وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ صوبے کی تیز رفتار ترقی اور عوام کی خوشحالی کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔ صوبے بھر میں اربوں روپے کی لاگت سے میگاپراجیکٹس مکمل کئے گئے ہیں اور ایک ایک پائی عوام کی فلاح و بہبود اور انہیں بنیادی سہولتوں کی فراہمی پر شفاف انداز میں صرف کی جا رہی ہے۔ شفافیت، معیار اور رفتار حکومت پنجاب کی پہچان اور ترقیاتی منصوبوں کا طرہ امتیاز ہے ۔ ترقیاتی منصوبوں میں اربوں روپے کی بچت کرکے ملک کی تاریخ میں ایک مثال قائم کی گئی ہے۔ عوام کو ترقیاتی منصوبوں کے ثمرات سے جلد مستفید کرنے کیلئے انہیں تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کا اظہار آج یہاں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ میرٹ ہی تیز رفتار ترقی اور خوشحالی کی منزل حاصل کرنے کا ذریعہ ہے اور یہی وجہ ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے شفافیت اور میرٹ کی پالیسی اپنائی ہے اور پنجاب حکومت نے ہر شعبے میں میرٹ کو پروان چڑھایا ہے۔ تمام اداروں میں بھرتیاں سوفیصد میرٹ پر کرکے باصلاحیت افراد کو ان کا حق دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صحت، تعلیم، زراعت اور دیگر شعبوں کی ترقی کیلئے انقلابی اقدام اٹھائے گئے ہیں اور صوبے کی تاریخ میں پہلی مرتبہ چھوٹے کاشتکاروں کو بلاسود قرضے فراہم کئے جا رہے ہیں۔ بلاسود قرضوں کی فراہمی سے 6 لاکھ سے زائد چھوٹے کاشتکاروں کو فائدہ ہوگا۔ اربوں روپے کے کسان پیکیج نے زرعی شعبہ میں انقلاب کی بنیاد رکھ دی ہے۔ چھوٹے کاشتکار کی خوشحالی اور زرعی شعبہ کی ترقی کیلئے ایسے بے مثال اقدامات کئے گئے جن کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ جعلی ادویات کے گھناﺅنے کاروبار کے خاتمے کیلئے بھرپور اقدامات کئے گئے ہیں۔ صوبے میں سٹیٹ آف دی آرٹ ڈرگ ٹیسٹنگ لیبز قائم کرکے باصلاحیت افراد کو بھرتی کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو سرکاری ہسپتالوں میں معیاری ادویات کی فراہمی پر سالانہ اربوں روپے خرچ کئے جا رہے ہیں اور صوبہ بھر میں صحت کے منصوبوں کو تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے۔ ہیپاٹائٹس کے خاتمے کیلئے موثر اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔ جدید طبی سہولتوں سے آراستہ ہیپاٹائٹس فلٹر کلینکس کا دائرہ پنجاب کے تمام اضلاع تک پھیلایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وطن عزیز کو قائدؒ اور اقبالؒ کا پاکستان بنانے کا عزم کیا ہوا ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے فلاح عامہ کے انقلابی پروگرامز سے عوام مستفید ہو رہے ہیں۔ اربوں روپے کے وسائل شفافیت یقینی بنا کر ترقیاتی منصوبوں میں بچائے گئے ہیں اور اس بچت کا فائدہ عوام کو ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بچائے گئے وسائل عوام کی خوشحالی پر صرف کئے جا رہے ہیں۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی آخری رسومات کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ڈاکٹر رتھ فاﺅ جذام کے مریضوں کیلئے زندگی کی امید تھیں۔ انہوں نے ٹی بی اور جذام کے خاتمے کیلئے قابل قدر خدمات سرانجام دیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی سماجی خدمات کو پاکستانی قوم قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور انہیں بھرپور خراج عقیدت پیش کرتی ہے۔ڈاکٹر رتھ فاﺅ کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔