دشمن کا بارود ختم ہو جائیگا مگرہماری،جنرل باجوہ کی واہگہ بارڈر پر للکار

لاہور، کوئٹہ (کرائم رپورٹر، بیورو رپورٹ) واہگہ بارڈر پرجشن آزادی کی مناسبت سے تقریب کا اہتمام ،آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ کی خصوصی شرکت،کور کمانڈر لاہور ، ڈی جی رینجرز ، جی او سی ٹین ڈویژن سمیت دیگر اعلی شخصیات نے شرکت کی،تقریب میں فنکاروں ، اداکاروں، کھلاڑیوں اور شاعروں سمیت بہت بڑی تعداد میں شہریوں کی شرکت ، ہر طرف سبز ہلالی پرچموں کی بہار ،تقریب ملی نغموں کی گونج اورشرکاءکے پاکستان زندہ باد کے فلک شگاف نعروں سے گونج اُٹھی ۔بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روز واہگہ بارڈر پر جشن آزادی کی مناسبت سے تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ نے خصوصی طور پر شرکت کی ۔اس موقع پر کور کمانڈر لاہورلیفٹینٹ جنرل صادق علی ، ڈی جی رینجرز میجر جنرل نوید حیات خان، جی او سی ٹین ڈویژن میجر جنرل محمد عامر،شاعر امجد اسلام ،اداکار ایوب کھوسہ، عارف لوہار،اتھیلٹ نسیم ، حمید ، ہاکی پلیئر سہیل عباسی ،انضمام الحق اور گلوکار وارث بیگ سمیت دیگر اعلی شخصیات نے شرکت کی۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ نے اس موقع پر تقریب سے خطاب بھی گیا جبکہ تقریب کے دوران ہر طرف سبز ہلالی پرچموں کی بہاردکھائی دی۔ تقریب ملی نغموں کی گونج اورشرکاءکے پاکستان زندہ باد کے فلک شگاف نعروں سے گونج اُٹھی ۔واہگہ بارڈر پر لہرانے والا پاکستانی پرچم جنوبی ایشیا کا سب سے اُونچا ہے جس کی اُونچائی 400فٹ ہے جبکہ پاکستانی پرچم کی لمبائی 120فٹ اور چوڑائی 80فٹ ہے ۔ دوسری جانب ہماسایہ ملک بھارت کے پرچم کی اُنچائی صرف360فٹ ہے ۔ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ لاہور میں واہگہ بارڈر پر پاکستان کے 70 ویں جشن آزادی کے سلسلے میں جنوبی ایشیا کو سب سے بڑا اور دنیا کے آٹھویں بڑے پاکستانی پرچم کو لہرایا۔ جشن آزادی پاکستان کی پروقار تقریب واہگہ بارڈر میں منعقد ہوئی جس کے مہمان خصوصی چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ تھے جبکہ دیگر مہمان بھی شریک تھے۔ اس موقع پر پاکستان کا قومی ترانہ بھی پرھا گیا جبکہ جنرل قمر باجوہ اور دیگر افراد نے قومی پرچم کو سلامی دی اور موجود شرکا نے پاکستان زندہ باد کے فلگ شگاف نعرے لگائے۔ واہگہ بارڈر میں لہرایا گیا پرچم پاکستان اور جنوبی ایشا کا سب سے بڑا جبکہ پوری دنیا کا آٹھواں بڑا پرچم ہے۔ پاکستانی پرچم کو 4 سو فٹ کی بلندی پر لہریا گیا جس کی چوڑائی 120 فٹ اور اونچائی 80 فٹ ہے۔ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر باجوہ نے کہا کہ لاہور میں ہی پاکستان کی قرارداد منظور کی گئی تھی اور ہمارے بزرگوں نے اس کے لیے قربانیاں دیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو شروع میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ ہندوستان نے اس کا پورا حصہ نہیں دیا تھا لیکن اب پاکستان نے بہت ترقی کی ہے۔ جنرل قمر باجوہ نے کہا کہ اس دوران ہم سے کچھ غلطیاں بھی ہوئیں تاہم اب ہم آئین و قانون کے تحت آگے بڑھ رہے ہیں، پاکستان کا ہر ادارہ ایمانداری سے کام کرہا ہے اور ترقی کررہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم پر شہیدوں کے خون کا قرض ہے اور ہم دہشر گردوں کو چن چن کر نشانہ بنائیں گے۔ انھوں نے کہا کہ کوئی ایسی طاقت جو پاکستان کی طرف غلط نظر سے آنکھ اٹھا کر دیکھے گی یا پاکستان کے اندرونی یا بیرونی طور پر نقصان پہنچانے کی کوشش کرے گی تو پاک فوج اور تمام ادارے اس کے سامنے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن کر کھڑی ہوں گی اور ان کے تمام عزائم خاک میں ملائیں گے۔ پاک فوج کے سربراہ نے کہا کہ یہ جھنڈا جس کو ہم نے آج بلند کیا ہے یہ ہماری ترقی اور بلندی کی علامت ہے اور جس طرح 400 کی فٹ پر یہ پرچم گیا اسی طرح پاکستان ترقی کرے گا۔ انھوں نے پروقار تقریب پرڈی جی رینجرز اور ان کی ٹیم کو مبارک باد دی۔ رات کے بارہ بجتے ہی ملک بھر میں جشن آزادی کا آغاز ہوگیا اور مختلف شہروں میں تقاریب منعقد ہورہی ہیں اور پرچم کشائی کی جارہی ہے۔ لاہور میں مینار پاکستان میں آتش بازی کا خوبصور مظاہرہ کیا گیا جبکہ ملک میں جگہ جگہ آتش بازی کی گئی۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ دہشت گردی کو مکمل شکست دینے کے لئے تمام اداروں کو مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے، شہدا نے پاکستان میں امن برقرار رکھنے کے لئے اپنی جانوں کو نذرانہ پیش کیا ہے ،پوری قوم اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے بہادر جوانوں کی قربانیوں کو یوم آزادی کے موقع پر خراج تحسین پیش کرے گی۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے گزشتہ روز کوئٹہ میں ہونے والے دھماکے میں شہید اہلکاروں کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور زخمیوں کی عیادت کی جبکہ انہیں کوئٹہ دھماکے سے متعلق بریفنگ بھی دی گئی۔نماز جنازہ میں گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی، وزیراعلی نواب ثنااللہ زہری، وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال، صوبائی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی، کمانڈر سدرن کمانڈ اور دیگر سیاسی و عسکری حکام نے شرکت کی۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف کا کہنا تھا کہ شہدا نے پر امن اور مستحکم پاکستان کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے،قوم شہداکی قربانیوں کے اعتراف میں یوم آزادی بھرپور طریقے سے منائے گی ۔ ملک میں دیرپا اور مستحکم پاکستان کے قیام کے لئے دہشت گردی کے خلاف پاک فوج کی جدوجہد جاری رہے گی۔واضح رہے کہ گزشتہ روز کوئٹہ کے علاقے پشین روڈ پر خودکش حملے کے نتیجے میں 8 اہلکاروں سمیت 15 افراد شہید اور 40 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

خاص خبریں


imran khan toda.jpg
asif ali zardari
panama
ch nisar ali khan

سائنس اور ٹیکنالوجی


chakotra.jpg

تازہ ترین ویڈیوز


تصاویر

HEAD OFFICE
Khabrain Tower
12 Lawrance Road Lahore
Pakistan

Channel Five © 2015.
© 2015, CHANNEL FIVE | All rights of the publication are reserved by channel-5.tv