خصوصی رپورٹس    

ملک بھر میں یکساں نظام صلوٰةاور خطبہ جمعہ کا فیصلہ

اسلام آباد (آن لائن) ملک بھر میں مذہبی ہم اہنگی اور فرقہ واریت کے خاتمے کےلئے وزارت مذہبی امور نے کوششیں تیز کر دی ہیںصوبہ سندھ میں یکساں نظام صلوٰة اور خطبہ جمعہ پر مختلف مکاتب فکر کے علماءنے کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کرلیاجو حتمی فارمولہ تیار کرے گی، خیبر پختونخوا اور پنجاب کی حکومتوں کو بھی یکساں نظام صلواة کے حوالے سے مختلف مکاتب فکر کے علماءکے مابین مشاورت کرنے کےلئے خطوط ارسال کر دیئے گئے ہیں سندھ میں علماءکرام نے ضابطہ اخلاق تیار کر لیا ہے جس کے تحت کسی کو کافر اور واجب القتل قرار دینے کا فتویٰ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہوگا، انبیائ، صحابہ کرام، اہلبیت اور دیگر مکاتب کے مقدسات کی توہین پر سخت کارروائی کی جائے گی صوبائی کمیٹی کی تیار کردہ سفارشات پر وفاقی حکومت قانون سازی کرے گی وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے بتایا کہ اسلام آباد میں ایک ہی وقت میں اذان اور نماز کا وقت مقرر کرنے کا فیصلہ مفید ثابت ہو رہا ہے لوگوں نے اس کو سراہا ہے۔ سندھ میں بھی ہماری خواہش یہی ہے کہ صوبائی وزارت مذہبی امور کمیٹی بنائے تاکہ یکساں نظام صلوٰة کے حوالے سے اتفاق رائے سے فیصلہ کیا جاسکے وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے مذہبی امور ڈاکٹر عبدالقیوم سومرو نے کہا کہ علماءکی معاونت اور مشاورت سے ہم اس حد تک کامیاب ہوگئے ہیں کہ اب کوئی کسی کو کھلے عام کافر قرار دیتا ہے اور نہ واجب القتل قرار دیتا ہے۔ مذہبی منافرت پھیلانے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔ مذہبی انتشار کی کوئی گنجائش نہیں ہے اس موقع پر مختلف علماءنے اظہار خیال کیا اور طویل مشاورت کے بعد ضابطہ اخلاق کے نکات کو حتمی شکل دی گئی، جس میں بتایا گیا ہے کہ کفر کے فتوے لگانا اور کسی کو واجب القتل قرار دینا ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہوگی اور ایسے افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انبیائ، صحابہ کرام، اہلبیت اور دیگر مکاتب اور مذاہب کے مقدسات کی توہین قابل گرفت ہوگی اس موقع پر اعلان کیا گیا کہ صوبے میں یکساں نظام صلوٰة ،جمعہ کے خطبے کے لیے تمام مکاتب فکر کے علماءکرام پر مشتمل کمیٹی تشکیل دیدی گئی ہے۔

Mazeed News
ملک بھر میں یکساں نظام صلوٰةاور خطبہ جمعہ کا فیصلہ

قومی خبریں    

بین الاقوامی خبریں    

سپورٹس    

شوبز    

دلچسپ و عجیب    

صنعت و تجارت